90

دہشت مچانے والے ہاتھی کو واپس بھیج دیا گیا

[ad_1]

حیدرآباد کے ضلع کومرم بھیم میں دو افراد کو ہلاک کرتے ہوئے لوگوں میں دہشت پھیلانے والے ہاتھی کو بالآخر بڑی مشکلوں سے واپس بھیج دیا گیا۔

غیرملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق دہشت پھیلانے والا ہاتھی بھارتی ریاست مہاراشٹر سے عادل آباد کے جنگلات میں داخل ہوا۔ سرحدی علاقوں میں دہشت مچانے والے ہاتھی کے حملے میں دو افراد بھی اپنی جان گنوا بیٹھے۔

مرنے والوں کی شناخت الوری شنکر اور پوشنا کے طورپر ہوئی ہے۔ ہاتھی کے حملے نے مقامی افراد کو خوفزدہ کردیا تھا جبکہ انھوں نے ہاتھی کو پکڑنے کے لیے لوگوں نے محکمہ جنگلات کے حکام کو فوری اطلاع دی۔

محکمہ جنگلات کی تین ٹیموں نے تھرمل ڈرون کی مدد سے ہاتھی کی تلاش کا کام شروع کیا۔ بعدازاں ہاتھی کے ملنے کے بعد حکام نے اسے مہاراشٹرا کے جنگلات منتقل کرنے کا آپریشن شروع کیا۔

دہشت پھیلانے والے ہاتھی کو واپس جنگل بھیجنے کا عمل کئی گھنٹوں تک جاری رہا جبکہ ضلع آصف آباد سے ہاتھی کے جانے پر مقامی افراد کے معمولات بحال ہوئے۔

Comments



[ad_2]

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں